There are no advertisements in the Layyah yet

*ڈیپ فیک ٹیکنالوجی*

*تحریر:سیفی ملک*

فحاشی آج کے دور کا ایک بڑھتا ہوا مسئلہ ہے۔ یہ ایک ایسی بیماری بن چکی ہے جو نئ نسل کی سوچ کو متاثر کر رہی ہے۔ اس سے اعصابی نظام میں خلل پڑ رہا ہے اور درجنوں بیماریاں وجود میں آرہی ہیں ۔ فحاشی آپ کے جسم کے ساتھ ساتھ آپ کی روح کو بھی متاثر کرتی ہے۔ اسلام میں بدفعلی ایک عظیم گناہ ہے اور اس کی سخت سزا مقرر کی گئی ہے۔ فحاشی پھیلانے میں سب سے بڑا کردار انٹرنیٹ اور موبائل فون کا ہے۔ یہ سچ ہے کہ گوگل سے دنیا بہت فائدہ اٹھا رہی ہے۔ مگر یہی گوگل دنیا میں فحاشی جیسے بیسیوں غلیظ ترین کاموں کو نئ نسل میں ابھار رہا ہے فحش انڈسٹری میں کام کرنے والے زیادہ تر لوگ بے روز گار طبقے سے وابستہ ہو سکتے ہیں۔

جن کو کام نہیں ملا اور وہ اس قابل نفرت دهنده پر لگ گئے۔ ڈیپ فیک ٹیکنالوجی بھی اسی فحاشی کی ایک قسم ہے۔ یہ ایک ایسی ٹیکنالوجی ہے جو آپ کی شکل یعنی چہرے کو سکین کر کے کسی بھی فحش ویڈیو میں لگا سکتی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ یہ چہرے کے تاثرات کو ویڈیو کے مطابق بدل بھی سکتی ہے۔ اس ٹیکنالوجی کو استعمال کر کے کئ نامور شخصیات کی فیک فحش ویڈیوز بھی بنائ جا

چکی ہیں۔

جنیٹک ایڈور سیریل ٹیکنالوجی ڈیپ فیک ٹیکنالوجی میں استعمال ہونے والا اصل آلہ ہے جو چہرے کے ساتھ ساتھ اس کے تاثرات کی بھی نقل اتار سکتا ہے۔ بات اگر سیدھے الفاظ میں کہی جائے تو یہ سادہ لوح یا شریف آدمی کو بدنام کرنے کی ایک سوچی سمجھی سازش ہے۔ انسان کو اپنی جان سے پیاری اپنی عزت ہوتی ہے۔ عزت کے بغیرانسان کا کچھ باقی نہیں رہتا۔ اس ٹیکنالوجی میں زیادہ تر عورت کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

سیکڑوں مردوں عورتوں کی تصاویر فیس بک یا دوسرے سوشل میڈیا اکاؤنٹس سے اٹھا کر ان کی اس ٹیکنالوجی کے ذریعے فحش ویڈیوز بنائ جا رہی ہیں ۔ جب کہ ان بے چاروں کو بھنک تک نہیں پڑتی۔ یوں ان شریف لوگوں کو معاشرہ غلطی فہمی کی بنا پر بے غیرت کہنے لگ پڑتا ہے۔ اس ٹیکنالوی کو بند کرنے کے خاطر خواہ اقدامات فی الحال نہیں ہوے ۔ البتہ فیس بک کے مالک نے اس انسان کے لیے دس ملین ڈالر کا انعام رکھا ہے جو اس ٹیکنا لو جی کو ختم کر سکے ۔ مگر یہ بھی حقیقت ہے کہ اس ٹیکنالوجی کو ختم کرنا عام آدمی کے بس کی بات نہیں ۔ اس کے پیچھے بہت بڑے گروہ کا ہاتھ ہے۔ المیہ تو یہ ہے کہ ان جھوٹی ویڈیوز پر چند لمحوں میں لاکھوں ویوز ہوتے ہیں ۔ درحقیقت جب تک ہم اپنی سوچ نہیں بدلیں گے کچھ بھی بدلنا ممکن نہیں ہے۔

جتنا ہو سکے خود کو عبادات میں مشغول رکھیں اور خود کو خدا کے سپرد کر دیں ۔ اس کی ذات سے زیادہ نگہبان کوئ نہیں ۔ اللہ پاک آپ کا اور میرا حامی و ناصر ہو۔ آمین

Show more
0
87

خود سے جتنا سیکھیں۔۔۔۔


انسان ازل سے ہی حالتِ جنگ میں ہے۔ایک جنگ وہ زمانے سے کرتا ہے جس میں اُسنے رہنا ہوتا ہے۔مگر ایک ایسی جنگ ہے جو وہ خود سے کرتا ہے۔اسکو ہر کوئی اپنے اپنے طریقے سے بیان کرتا ہے ۔کوئی اسکو ضمیر کی جنگ کہتا ہے،کوئی اسکو خودی کی جنگ کہ دیتا ہے، کہی یہ نفس کی جنگ ہے، اور کبھی یہ دل و دماغ کی جنگ کا نام دیا جاتا ہے۔نفسیات اسکو consciousness کا نام دیتی ہے،دین اسکو نفس کا نام دیتا ہے،فلاسفی اسکو خودی کی جنگ کہتی ہے،قانون اسکو غلط اور درست کی جنگ کہتا ہے، مذہب اسکو حلال حرام کی جنگ اور سائنس اسکو مشاہدہ اور پریکٹیکل کی جنگ کا نام دیتا ہے۔ آپ اس جنگ کو جو بھی نام دیں مگر ایک بات سب سے اہم ہے اس دنیا میں جن لوگوں نے یہ خود سے خود کی جنگ لڑی ہے وہی کامیاب ہوئے ہیں۔جو خود کو فتح کر گئے دنیا اُنکے آگے جھک گی۔جو خود سے ہار گئے وہ دنیا سے کبھی بھی نہ جیت سکتے ہیں۔خود سے خود کی جنگ کیا ہے۔آپ دیکھیں ایک بندہ کامیاب ہے۔آپ بل گیٹس،ٹیسلا،منڈیلا،یا جو بھی مشہور شخصیات کی کامیابیاں دیکھتیں ہیں یہ لوگ خود سے جنگ کرتے رہے۔اپنےکام کے ساتھ وفادار رہے،محنت لگن،مشکل ،مصیبت میں ہار نہیں مانی۔بلکہ خود کو خود سے بہتر کرتے گئے۔بہتر سے بہترین کا سفر ان لوگوں خود سے مقابلہ کر کے جیتا۔سوچیں اگر یہ لوگ لوگوں کی باتیں،وقتی ناکامیاں کے آگے حوصلے ہار جاتے تو آج یہ لوگ کامیاب نہ ہوتے۔

بلکل اسی طرح آپ نفسیات کا پہلو دیکھیں۔فرائیڈ ماڈرن نفسیات کا فائنڈر کہا جاتا ہے ۔اُسکا کہنا ہے انسان کی پرسنالٹی ۔ID،Ego،Super Ego کا مجموعہ ہے۔اگر ان میں بیلنس ہے تو انسان نارمل ہے اگر بیلنس آؤٹ ہوا تو ابنارمل ہے بندہ۔وہ کہتا ہے super Ego وہ مقام ہے جہاں انسان خود سے ایک جنگ لڑتا ہے ۔ یہاں ہر انسان نہیں پہنچ سکتا ۔جو یہ جنگ جیت جاتا ہے وہ اپنے اصول بنا لیتا ہے ۔ایسےکامیاب اصول جن کو دنیا فالو کرتی ہے۔جیسے عبدالستار ایدھی جنہوں نے لوگوں کی مدد کے ایسے اصول بنا دیے آج بڑی بڑی سوشل فاؤنڈیشن اُن کو استاد مانتی ہیں۔

اسی طرح فلسفہ اسکو خود سے خود کی جنگ کو خودی کا نام دیتا ہے۔اقبال کہتا ہے خود کو اتنا بلند کرو کے خُدا خود پوچھے آپکی رضا کیا ہے۔خودی دراصل یقین کا نام ہے۔خودی دراصل خود پے اعتماد کا نام ہے۔خودی ایک ایسا مقام ہے جہاں انسان دنیا سے آگے کی سوچتا ہے۔یہ خودی ایسے نہ ملتی۔اِسرار خودی میں اقبال خود کہتا ہے خودی حاصل کرنی ہے تو دل کو پاک کرو،محنت کرو،اپنےآپ سے جنگ کرو ۔خود کو نفرت،کینہ،بغض،تکبر سے جنگ کر کے آزاد کرو۔ خود کو ایک خدا کی محبت میں قربان کر دو۔جب انسان یہ جنگ جیت لیتا ہے تو وہ سعدی،رومی،تبریز،بلھا،قلندر،باہو یا میاں محمد بخش بن جاتا ہے۔۔


مذہب اسکو نفس کی جنگ کہتا ہے۔اسی لیے تو کہا جاتا ہے تیرا نفس ہے تیری دنیا آخرت ہے۔جس نے اپنے نفس کو پہچان لیا گویا اُسنے رب کو پہچان لیا۔نفس کی جنگ در اصل خود سے جنگ ہے ۔آپ نفس سے جنگ جیت کے ہی بُرائی سے بچتے ہیں۔آپکا نفس کہتا بھوکا نا رہو آپ روزہ رکھتے۔آپ کی سامنے شراب ہے نفس کہتا پی لو آپ نہیں پیتے آپ جنگ جیت جاتے،آپ جھوٹ نہیں بولتے،کسی کا برا نہیں چاہتے، آپ زنا نہیں کرتے۔غرض ہر وہ کام جو نفس کہتا آپ نہیں کرتے تو آپ پھر ولی بن جاتے ہیں۔جب آپ یہ جنگ جیت جاتے تب آپ بلال رضی ،اویس قرنی بن جاتے۔اگر آپ نفس سے ہار جائیں تو ابلیس یہ یزید بننے میں دیر نہیں لگتی۔

سائنس بھی اسکو اپنا رنگ دیتی ہے۔سائنس کہتی ہے جو مشاہدہ کرتے ہیں پھر اسکو پریکٹیکل کر لیتے۔بار بار hypothesis کی ناکامی کی بعد وہ پھر ایڈیسن بن جاتے۔جو خود سے خود کی جنگ لڑتا وہی سائنس دان نیوٹن،اور آئین سٹائین بن جاتا۔

اسی طرح قانون بھی اسکو غلط اور صحیح کی جنگ کہتا ہے۔قانون کہتا ہے انسان خود سے ایک جنگ لڑتا ہے کہ غلط کو غلط کہنا ہے۔جو قانون دان یہ کر جاتے وہی تاریخ میں زندہ رہتی۔قائد اعظم جب مسلم کے حقوق کی جنگ میں آگئے تو انہوں نے سب آفرز کا انکار کر دیا جو انکو اس جنگ کے دوران دی گی۔آپ دیکھ لیں دنیا پوری اُنکی عظمت کو سلام کرتی ہے۔

خود سے خود کی جو جنگ ہے دراصل یہی انسان کی بقا ہے۔یہ جنگ جو جیت جاتے وہ باہر کی جنگ بھی جیت لیتے ہیں۔جو خود سے ہے ہار جاتے وہ دوسروں سے نہیں جیت سکتے۔ہمیں ہمیشہ اپنے آپکو جتنا ہے۔اپنےآپکو فتح کرنا ہے باقی سب خود آپ کے آگے جُک جائے گا۔۔


نعیم الیاس۔۔۔۔۔۔۔۔

Show more
1
71
https://avalanches.com/pk/layyah__1327843_14_02_2021

کامیابی کا ایک اصول۔۔۔۔

بانس کا پودا جب زمین پے لگایا جاتا ہے تو اسکو زمین سے باہر آنے میں پانچ سال لگ جاتے ہیں۔مالی پانچ سال اس کو پانی ،کھاد اور موسمی اثرات کا خیال رکھتا ہے۔جب پودا زمین سے باہر آتا ہے تو وہ پانچ ہفتوں نوے فٹ تک لمبائی حاصل کر لیتا ہے۔ایک دن میں دو سے تین فٹ تک لمبائی حاصل کرتا رہتا ہے۔ پھر یہ عمر بھر بڑھتا رہتا ہے اسکو کاٹ بھی دیں تو بھی کچھ دن میں لمبائی حاصل کر لیتا ہے۔اسکی عمر سالوں تک قائم رہتی ہے۔جب کہ دوسرےپودے بہت جلد اُگ جاتے ہیں اور اتنی ہے جلدی مرجھا جاتے ہیں۔بلکل اسی طرح ہمارے خواب،مقصد،اور کامیابیاں ہوتی ہیں۔ ۔انکی ایک بنیاد ہوتی ہے جس کو ایک وقت ،محنت ،جذبہ،یقین، مستقل مزاجی ،لگن اور خود اعتمادی کی ضرورت ہوتی ہے۔ چھوٹے خواب عام پودے ہیں کو جلدی اگتے اور مرجھاتے ہیں جب کہ بڑے خواب بلکل بانس کے پودے کی طرح ہوتے ہیں۔ آپ ہر کامیاب انسان کی زندگی دیکھیں آپکو ایک بات نظر آے گی اور وہ اُنکی بنیاد ۔جب وہ کامیاب ہو جاتے ہیں تو اُنکی گروتھ دن دوگنی اور رات چوگنی ہوتی ہے۔آج پوری دنیا چین کی مثال دیتی ہے ۔آج کا چین تیس سال تک زمین میں دفن رہے اور پھر دنیا کی لیڈنگ اکانومی بن گیا۔ چالیس سال تک اللّٰہ کے نبی کریم صلی االلہ علیہ وسلم خاموشی سے محنت کرتے رہے اور پھر وحی آ گی ۔پاکستان کا وجود تو مجدّد الف ثانی کے دور سے شروع ہوا مگر قرارداد پاکستان وہ مقام تھا جہاں بانس کا پودا زمین سے باہر آگیا اور اگلے سات سال میں پاکستان کا وجود بن گیا۔مینڈیلا کو ستائیس سال جیل میں دفن رہے جب باہر آئے تو بانس زمین سے باہر آ چکا تھا۔ ہر کامیابی در اصل ایک بنیاد مانگتی ہے۔اگر آپ زندگی میں کامیاب ہونا چاہتے ہیں تو سمجھ لیں آپ نے صبر کے ساتھ اپنے خواب کو وقت دینا ہے۔آپکا پودا جب تک زمین سے باہر نہیں آئے گا تب تک آپکو لوگ یہی کہتے رہے گیں کے یہ انسان پاگل ہے جو بنجر زمین کو پانی دے رہا ہے۔۔جب کہ آپکو پتہ ہوتا ہے اسی زمین میں میرا خواب ہے ایک نا ایک دن اسنے زمین سے باہر آنا ہے۔ہمیں زندگی میں ایک اصول ہمیشہ یاد رکھنا چاہیے کہ جتنا بڑھا خواب ہو اتنا سخت امتحان،انتظار،محنت،لگن،صبر،اُمید اور جنون درکار ہوتا ہے۔۔۔

نعیم الیاس۔۔

Show more
0
77
https://avalanches.com/pk/layyah__1324694_13_02_2021

ہم رشتے کیوں نبھاتے ہیں۔۔۔۔۔

کمرہ عدالت سے جیسے ہی باہر نکلا تو ایک میسج آیا ہوا تھا۔اس میں لکھا تھا کے "ہم اکیلے آئیں ،جائیں گے بھی اکیلے تو پھر ہم ساری زندگی رشتے کیوں نبھاتے ہیں؟" سوال نے میرے قدم وہی روک دیئے اور باہر صحن میں بیٹھ گیا اور اس سوچنا شروع کر دیا۔اسی دوران میں دیکھتا ہوں کہ درخت پر ایک پرندہ اپنے بچے کو کھانا چونچ میں ڈال کے کھلا رہا تھا۔ میں نے سوچا جب یہ پرندہ اکیلا آیا ہے تو اسکی ساتھ والے رشتے کیوں نبھا رہے ہیں۔۔دراصل ہم اس دنیا میں اکیلے نہیں آتے بلکہ ہم کو ایک پروسیس کے ذریعے دنیا میں لایا جاتا ہے۔ہمارےوجود سے پہلے ایک ارادہ ہوتا ہے۔پیار محبت خلوص چاہت احساس اور ذمداری ہوتی ہے۔ایک عمر بھر کا وعدہ ہوتا ہے جس کو نبھاتے نبھاتے لوگ دنیا سے چلے جاتے ہیں۔ہم ساری زندگی میں کبھی اکیلے ہوتے ہی نہیں ہیں۔آپ سوچیں آپ آج جو ہیں ،آپکا وجود،آپکی سوچ،آپکا مقام،سب کا سب ایک مجموعی کوشش کا نام ہے۔یہاں تک کہ آپ نے اس دنیا سے جانا ہے ،آپ کسی بی مذہب سے تعلق رکھتے ہیں آپ اکیلے نہیں جا سکتے۔آپ ساتھ محبتیں،نفرتیں،کامیابیاں، عزتیں،فساد،بغض،سوچ، خیال،رشتے،مذہب،شہرت، بصیرت،حسن،جوانی ،بچپن،بڑھاپا،خواشہیں،اور بہت کچھ ساتھ جاتا ہے۔انسان اور جانور میں فرق صرف رشتے نبھانے کا نام ہی ہے۔انسان کو انسان یہ رشتے بناتے ہیں۔یہ رشتے زندگی کی علامت ہیں۔یہ رشتے زندگی کا سکون ہیں ۔یہ رشتے زندگی کا مقصد ہیں۔زندگی کو زندگی کا رنگ دینے والے رشتے ہی تو ہیں۔ما ں باپ عمر بھر اولاد کے لیے جیتے ہیں ۔جنکی اولاد چھوڑ جاتی یہ ما ں باپ سے پہلے مر جاتی وہ والدین عمر سے پہلے ہے مر جاتے۔بہن بھائی،دوست،میاں بیوی،یہ سب رشتے آپکی زندگی میں آپکو زندہ رکھتے ہیں۔ہاں بعض اوکا ت ایسا ہوتا ہے کہ یہ رشتے انسان کو تکلیف دینا شروع کر دیتے ہیں۔میرا ماننا یہ ہے کہ ہو سکتا کوئی ایک رشتا آپکو کانٹا لگ رہا ہو مگر یہ بھی دیکھیں کے باقی تو سب پھول ہیں ۔ایک باغ میں اگر ایک کانٹے در جھاڑی اُگ آئی ہے تو کیا آپ پورا باغ ہے چھوڑ دیں گے؟ آپ بس اس کانٹے کو باہر نکال دیں گے ۔کبھی کبھی آپکو کانٹوں کو نکالنا نہیں بلکہ ignore کرنا پڑتا ہے۔ یہ تو تھا تصویر کا ایک رنگ۔اب آتے ہیں دوسری طرف۔

انسان ایک ایسا پودا ہے جو رشتوں کی بنیاد پے بڑھتا ہے۔آپکا وجود ایک پودا ہے۔اُسکی محبت ،چاہت،عزت،رہنمائی،احساسِ اور خلوص کا پانی بھی چاہے،اُسکی کانٹ چھانٹ کے لیے مختلف قسم کے اوزار استمال ہوتے ہیں اور یہ اوزار دوسروں کی نفرت، غصے،بغض،دھوکہ ،فراڈ وغیرہ ہوتے ہیں جو آپ برداشت کرتے ہیں اور بہتر سے بہترین ہوتے ہیں۔جیسے جیسے آپ بڑھتے جاتے ہیں آپکو کو یاد رکھنا پڑتا ہے کے آپکی جڑ زمین میں ہے ،آپ نے اسی زمین پے پھل اور سایہ دینا ہے کیوں کہ جب آپکا وجود کا بیج اس زمین میں رکھا گیا تھا تو آپ کو دھوپ،سایہ،بارش،موسم ، خزاں،بہار،سردی ،گرمی سے بچانے والے ،آپ کے اوپر سایہ کرنے والے پودے اب اسی زمین میں دفن ہیں۔اسی طرح آپ نے بھی آگے رشتہِ نبھانا ہے۔جو لوگ خود کو اکیلے کرنے کی کوشش کرتے ہیں ،یا یہ سمجھتے ہیں کہ ہم ہے کیوں نبھائیں وہ کسی جنگل میں اکیلے ہے دفن ہو جاتے جن کا کوئی وجود نہیں ہوتا ہے۔میں اپنی بات علامہ اقبال کے ایک شعر پے ختم کروں گا۔۔۔


فرد قائم ربط ملت سے ہے, تنہا کچھ نہیں۔۔۔۔.

موج ہے دریا میں اور بیرونِ دریا کچھ نہیں…

نعیم الیاس۔۔۔۔


Show more
1
72

قدرت کو سمجھیں

انسان زندگی میں کبھی ناکام نہیں ہوتا۔اگر کوئی چیز ناکام ہوتی ہے تو وہ ہے اُسکا ارادہ،اُسکا حو صلہ،اُسکا تخیل،اس کا آئیڈیا،اُسکی تدبیر،اُسکا دائرہ،اُسکی سوچ،اُسکا طریقہ،یا اس کا منصوبہ۔انسان اس ناکامی کو خود کی ناکامی سمجھنا شروع کر دیتا ہے۔قدرت کا کمال یہ ہے کہ اسنے اس کائنات میں انسان کے لیے سب رکھا ہے مگر ناکامی نہیں رکھی۔اسی لیے تو انسان کو اشرفالمخلوقات بنا دیا ہے۔اگر قدرت نے انسان کو ناکام کرنا ہوتا تو فرشتوں سے سجدہ نہ کرواتی،اسکو افضل ترین مخلوق کا درجہ نہ دیتی۔

اگر آپکو یقین نہیں آتا تو آپ خود دیکھیں آپکو ناکامی کی کوئی بھی ایک جامع تعریف نہیں ملے گی۔ہر انسان،ہر مضمون ناکامی کو اپنے رنگ میں بیان کرے گا۔ آج تک کوئی بھی اسکی ایک ایسی جامع تعریف نہیں بنا سکا جس پر سب متفق ہو جائیں۔ اسکی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ وقت کے ساتھ ساتھ انسان کے اندر ناکامی کا معیار بدلتا جاتا ہے،کسی وقت میں جس کو وہ ناکامی سمجھتا تھا کچھ وقت بعد وہی ناکامی دراصل اپنا وجود،اہمیت کھو چکی ہوتی ہے۔ ہر انسان کے لیے ناکامی مختلف ہے ۔ کسی کے لیے ناکامی دولت کا نہ ملنا ہے،کسی کے لیے ناکامی نوکری کا نہ ملنا ہے۔بچے کے لیے ناکامی کھلونا نہ ملنا ہے،اور کسی بزرگ کی ناکامی شاید اچھی صحت کا نہ ہونا ہے، کسی کی ناکامی شاید خوش نہ رہ پا نا ہے۔ہر انسان اس کو الگ طرح سے بیان کرتا ہے۔یہ محض انسان کے ذہن کا فتور ہے جو اسکو طور سے دور رکھتا ہے۔


حقیقت بات یہ ہے کہ ناکامی تو ایک رحمت ہے،یہ ایک قبولیت ہے،یہ ایک راستہ ہے۔جب کبھی آپ کسی چیز میں ناکامی محسوس کر رہے ہوں تو سمجھ جائیں کہ قدرت کو آپکا منصوبہ پسند آ گیا ہے، قدرت آپکی رہنمائی کر رہی ہے،آپکو راستہ دکھانے کی کوشش کی جا رہی ہے،قدرت نے آپکو کوشش کو قبول کر لیا ہے۔ آپ کے لیے اصل منصوبہ بندی کر رہی ہے۔اب یہ آپ پر ہے کہ آپ اس منصوبہ بندی کو سمجھ سکتے ہیں یا آپ اسکو ناکامی سمجھ کر راستہ چھوڑ دیتے ہیں۔انسان بھی قدرت کا ایک بچہ ہے جب وہ چلنا شروع کرتا ہے تو بار بار گرتا ہے مگر ہمت نہیں ہارتا کوشش کرتا رہتا ہے آخر وہی بچہ بولٹ ، دنیا کا تیز ترین بھاگنے والے بچہ بن جاتا ہے۔کامیاب لوگ قدرت کو سمجھ لیتے ہیں۔وہ اپنے خوابوں کے لیے موزوں زمین ڈھونڈ لیتے ہیں۔خواب بیج کی طرح ہوتے ہیں جو آپکو زمین میں بونے پڑ تے ہیں،یاد رکھیں صحرا میں اُگنے والے پودے پہاڑوں میں نہیں اُگ سکتے،میدان میں جو پھل لگتے ہیں وہ ساحلوں پے نہیں لگ سکتے۔جیسے ہر پودے کو ایک الگ ماحول چاہئے ہوتا ہے،اسی طرح ہر خواب کو بھی الگ ماحول کی ضرورت ہوتی ہے۔اگر آپ صحرا میں ہیں اور آپکا خواب پہاڑ ہیں تو آپکو سفر کرنا ہو گا اس زمین کی تلاش میں جہاں کا خواب آپ نے دیکھا ہے۔

ہم میں سے اکثر لوگ سفر نہیں کرتے اپنے خوابوں کے لیے موزوں زمین کی تلاش نہیں کرتے۔ہم اپنے خواب کا بیج بغیر سوچے سمجھے بو دیتے ہیں،اکثر اس پر محنت بھی کرتے ہیں مگر ہم اسکو اگانے میں ناکام ہو جاتے ہیں۔ جب ہمارا بیج نہیں اُگتا ہم قدرت کو شکوہ کر کے ہمت ہار دیتے ہیں۔جب کہ اُسکا نا اُگنا بھی قدرت کا ایک رسپانس ہے۔قدرت آپکو سمجھا رہی ہوتی ہے کہ آپکا بیج اس جگہ کے لیے نہیں ہے۔ہر کوئی اچھا ڈاکٹر نہیں بن سکتا،ہر کوئی اچھا انجینئر،کھلاڑی،آرٹسٹ،بزنس میں وکیل،جج،سیول سرونٹ ،یا اچھا استاد نہیں بن سکتا ۔اس لیے تو کہا گیا ہے غور و فکر کرو،اس کائنات میں غور و فکر کرنے والوں کے لیے نشیناں ہیں۔جب آپ غور کرتے ہیں تو آپکو بار بار اپنے خواب کے بیج کے لیے زمین ڈھونڈنا پڑتی ہے۔کامیاب لوگ بار بار اپنا بیج بوتے ہیں آخر کار موزوں زمین ڈھونڈ لیتے ہیں جیسے کہ جیک ما کو ستائیس بار نوکری نہیں ملی پھر وہ علی بابا کا مالک بن گیا۔اس نے اپنا بیج ستائیس جگہ بویا اور آخر اسکو وہ ماحول مل گیا جس میں اُسکا بیج درخت بن گیا۔ ایڈیسن کو ہزار بار سفر کرنا پرا پھر بلب ملا،کے ایف سی کا ملک کو ستر سال سفر کی مسافت درکار تھی۔


جیسے زمین اپنی مدار کی ارد گرد گھومتی ہے یہ لوگ بھی سفر کے دوران اپنے خواب سے دور نہیں ہوئے۔ زندگی کے حالات سے لڑتے رہے مگر اپنے مدار سے دور نہیں ہوئے ،جیسے زمین اپنے محور کے گرد چکر لگاتی ہے ویسے یہ لوگ سیلف انالسس کرتے رہے۔ان لوگوں کو پتا تھا سردی گرمی خزاں کے بعد بہار آ جانی ہے، اور خود کی تکمیل کرتے رہے۔اپنے خوابوں کی زمین ڈھونڈتے رہے۔ یہ لوگ جانتے تھے اگر ایک بہار گزر بھی گئی تو بھی اگلی بہار کی اُمید پے چلتے رہے۔

یہ لوگ ایک ہی اصول پے کام کرتے ہیں وہ یہ ہے یا تو ہم درخت ہیں،یا ہم باغ ہیں۔اس کے علاوہ قدرت نے انسان کو بیکار پیدا نہیں کیا۔ان لوگوں کو پتا ہوتا ہے ہمارا خواب دوسروں کی زندگی بھی بدل سکتا ہے اس لیے ہو سکتا ہے ہمارے درختِ پر پھل نا لگیں مگر بیج ضرور لگیں گے جو دوسروں کے خواب پورا کر دیں گیں۔ان بیجوں سے اور پودے لگیں گے ایک باغ بن جائے گا۔تاریخ بھری پڑی ہے ایسی مثالوں سے ۔ہم زیادہ دور نہیں جاتے آپ علی گڑھ تحریک کو دیکھیں اگر سر سعید احمد خان کا خواب صرف پھل دیتا تو وہ ایک درختِ ہوتا مگر وہاں بیج اُگ گئے جو آگے جا کر ایک باغ بن گے،بل گیٹس،زکربرگ،عبدالستار ایدھی جیسے لوگ اپنے زِندگی میں کئی بار ناکام تھے مگر قدرت ان کے بیج کو درخت نہیں بنانا چاہتی تھی بلکہ باغ بنانا چاہتی تھی۔آخر کار وہ ایسی باغ بن گئے لاکھوں لوگ اپنے خواب پورے کرنے ان کے پاس جاتے ہیں۔ہمیں بھی زِندگی میں یہ اصول اپنا لینے چاہے کہ یا تو ہم درخت ہیں یہ ہم باغ ہیں۔اگر آپ کا پودا نہیں اُگ رہا تو اپنی جگہ بدل لیں،بار بار بدل لیں آپکو ایک دن وہ جگہ مل جائے گی۔دوسرا ہو سکتا آپ خود اپنا خواب پورا نا کر سکیں مگر موزوں زمین کی تلاش کر لیں تو دوسروں کو وہاں کا پتہ ضرور بتائیں تا کہ آپ کا بیج بھی اس کامیاب باغ کا حصہ بن جائے کیوں کہ اگر کسی باغ میں سب درختِ پھل دار ہوں اور کسی ایک پر پھل نا بھی لگا ہو تو بھی سب یہی کہتے ہیں یہ باغ پھل دار ہے۔تیسرا کبھی بھی اپنا مدار نہیں چھوڑنا چاہیے۔ہو سکتا زِندگی آپکو کبھی دور لے جائے،حالات ایسے آ جائیں مگر خواب کو خود سے دور نہ ہونے دیں۔ اگر آپ نے مدار چھوڑا سمجھو کہ آپ اُلجھ گئے پھر آپ مدار میں واپس نہیں آ سکتے۔ ہم کو اپنے محور کے گرد بھی گھومنا چاہے تا کے ہم خود کو بھی سمجھ سکیں ،خود پے کام کر سکیں۔یہ محور اور مدار کا نظام ہے اصل کنجی ہے۔ سب سے اہم بات کہ آپ خزاں کے پھول ہیں تو بہار میں صبر کریں،اگر آپ گرمی کے پھول ہیں تو سردی میں صبر کریں،آپ اگر مدار میں ہیں تو ہر سال بہار بھی آنی ہے،خزاں بھی آنی ہے،سردی بھی آنی ہے اور گرمی بھی آنی ہے۔آپکو اپنا مدار قائم رکھنا ہے قدرت آپکو آپکی جگہ تک ضرور لے جائے گی۔


نعیم الیاس۔۔

(اگر آپکو پسند آئی ہے تو آگے شیئر کر دیں نہیں تو میری رہنمائی کر دیں)

Show more
0
76
https://avalanches.com/pk/layyah__1935_449846_20_06_2020
https://avalanches.com/pk/layyah__1935_449846_20_06_2020

عدالت کو بھی انصاف چاہیے


یہ1935 کی بات ہے کہ نیو یارک میں سخت سردی کی رات ایک عدالت میں ایک ملزمہ کو لایا گیا۔اس پر الزام تھا کہ اسنے روٹی کے چند ٹکڑے ایک دوکان سے چوری کیے ہیں۔جب جج نے پوچھا کہ یہ چوری تم نے کی ہے تو اس عورت نے جواب دیا ہے کہ اسنے چوری کی ہے۔جج نے پوچھا کہ تم نے چوری کیوں کی تو اسنے کہا کہ میرے پوتے بہت دِنوں سے بھوکے تھے اور گھر میں کوئی بھی نہیں تھا جو کھانا لا سکے۔جج نے پوچھا کہ تم نے ہمسائیوں سے کچھ نہیں مانگا اسنے کہا کہ میں درخواست کی تھے مگر کسی نے نہیں سنی۔جج نے کہا کہ تم نے دوکاندار سے مانگا تھا؟ تو اس عورت نے جواب دیا مانگا تھا.اسنے بھی مجھے دھتکار دیا تھا۔جج نے ایک آه بھری اور مدعی کی طرف دیکھا۔مدعی نے کہا میں میں اس عورت کو ہر صورت سزا دلوانا چاہتا ہوں تا کہ کوئی اور یہ کام نہ کرے۔جج نے عورت کی طرف دیکھا کہا کہا قانون کی نظر میں تم ملزمہ ہو لہذا قانون سب کے لیے ایک ہے ۔میں تم کو 10 ڈالر جرمانہ کرتا ہوں۔ ساتھ ہی اسنے اپنی جیب سے 10 ڈالر نکال کے کہا کہ یہ میری طرف سے حکومتی خزانے میں ادا کر دو۔اسکے بعد جو فیصلہ کیا اسنے سارے نیو یارک کو ہلا کہ رکھ دیا تھا۔اسنے ساتھ ہی حکم دیا کہ اس کورٹ روم میں کھڑے ہر شخص کو 50 سینٹ جرمانہ کرتا ہوں جن کو یہ بھی پتہ نہ چل سکا کہ اُن کہ ارد گرد بھوکے بچے ہیں اس نےدوکان دار کو بھی 50 سینٹ جرمانہ جس سے دخواست کی اسنے نہ سنی ،اسکے علاوہ ہمسائیوں کو بھی 50 سینٹ جرمانہ کر دیا جنہوں نے انکا خیال نا رکھا ۔ جج فروئرلو لا گرادیا کہ اس فیصلے کہ بعد نیو یارک کے سیاسی،سماجی ،معاشی اور سب سے بڑھ کے عدالتی نظام میں ایک نیا موڑ پیدا کر دیا ۔انہوں نے ایسی قانون بنا دئیے کہ پھر نیو یارک دنیا کہ امیر ترین شہر بن گیا۔ریاست کہ ایک اہم ستون کہ ایک فیصلے نے تاریخ بدل دی۔

انہوں نے ثابت کر دیا کہ کوئی بھی ریاست بھوک کہ ساتھ تو رہ سکتی ہے مگر انصاف کہ بغیر نہیں رہ سکتی ۔اسی وجہ سے عدالتی نظام ریاست کا سب سے اہم ستون کا کردار ادا کرتا ہے۔تاریخ گواہ ہے جتنی بھی قومیں تباہ ہوئی ہیں اُن کے پیچھے ایک ہے وجہ تھی اور وہ یہ تھی کہ اُنکا عدالتی نظام کمزور ہو چکا تھا۔جس جگہ انصاف ختم ہو جائے وہاں بہت سے سماجی،سیاسی،معاشی ،معاشرتی برائیاں جنم لے لیتی ہیں جو ملک کو اندر سے کھوکھلا کر دیتی ہیں۔اسی وجہ سے ایک انگلش شاعر چائسر نے کہا تھا"اگر سونے کو زنگ لگ جائے تو لوہے کا کیا بنے گا" ۔کسی بھی ملک کا عدالتی نظام سونے کی حثیت رکھتا کیوں کہ یہ

ریاست کا وہ ستون ہے جو دوسرے ستونوں کے اوپر بھی چیک انڈ بیلنس رکھتا ہے۔یہ ادارہ سیاست دان،بیورو کریٹس،میڈیا،سیکورٹی ایجنسی،اور باقی سب اداروں کا احتساب کر سکتا ہے ۔اگر اس ستون کو زنگ لگ جائے تو باقی سب ادارو ں کو زنگ لگنا بہت ہے آسان ہے ۔شاید اسی وجہ سے پاکستان میں اس ستون کو قابو کرنے کی ہمیشہ سے ہی کوشش کی جاتی رہی ہے۔کبھی ایمرجنسی لگا کر ،کبھی اامنڈ منٹس کر کے،کبھی مارشل لا لگا کر اور کبھی ریفارمز کا نام پر اس مقدس ادارے کے احترام کو پامال کیا جاتا رہا ہے۔اس ادارے کو اپنی اصل ازادی سے کام نہیں کرنے دیا گیا۔،ہر طرح کی رکاوٹ کے باوجود اس ادارے نے اپنی وجود قائم رکھا ہوا ہے اور کچھوے کی رفتار سے لگاتار چلتا آ رہا ہے۔


پاکستان کی عدالتی نظام دو حصوں میں تقسیم ہے۔لوئر کورٹس اینڈ ہائر کورٹس۔ہائر کورٹس میں سپریم کورٹ،4 صوبوں کے ہائی کورٹس اور کیپیٹل کا ایک ہائی کورٹ آتا ہے۔۔لوئر کورٹس میں سیول کورٹس،ڈسٹرٹ کورٹس،اس کے علاوہ کریمنل،لیبر،کنزیومر ،بنکینگ،ایڈہاک اور دوسرے کورٹس شامل ہوتے ہیں۔ہر ڈسٹرکٹ میں سیشن کورٹس،ایڈیشنل سیشن کورٹس،پھر سیول کورٹس درجہ ایک،درجہ دوئم،درجہ سوئم ہوتی ہیں جو مختلف مالیت کے حساب سے مقدمے سنتے ہیں۔ایک اندازے کے مطابق اس وقت 3100 ججز تقریبا 36 لاکھ مقدمے سن رہے ہیں۔اتنی کم تعداد کے باوجود بھی عدلیہ کو الزام دیا جاتا ہے ہے انکا نظام صحیح نہیں ہے۔ یہاں انصاف بِکتا ہے۔اس بات میں کوئی شک نہیں ہے کہ ہمارا عدالتی نظام بہت ہی فرسودہ ہو چکا ہے۔سیول کیسز میں کئی سال گزر جاتے ہیں مگر کیس وہی کا وہاں رہتا ہے۔وقت کا ضیاع بہت زیادہ ہوتا ہے۔لوگوں تنگ آ کر کیس چھوڑ دیتے ہیں۔کریمنل کورٹس کا بھی یہی حال ہے ۔ملزم پیسے کے دم پر آزاد ہو جاتے ہیں ۔


اگر آپ غور سے سوچیں تو آپکو کو معلوم ہو گا اتنی فرسودہ عدالتی نظام میں صرف عدالت کا قصور نہیں ہے بلک اسکے ساتھ جڑی اور بھی بہت سی وجوحت شامل ہیں۔ہم کو اپنا دائرہ کر بڑھا کر دیکھنا ہو گا کہ اس فرسود نظام کی زمدار صرف عدالتیں ہیں یا کوئی اور بھی شامل ہے۔جب آپ تحقیق کریں گے آپکو سمجھ آے گی کی کہ یہاں عدالتوں کو خود بھی انصاف کی ضرورت ہے۔


عدالتوں کا نظام میں سب سے بڑی رکاوٹ در اصل قومی اسمبلی ہے۔عدالت کا کام انصاف دینا ہے اسمبلی کا کام قانون بنانا ہے ۔جب قانون بنانے والا ادارہ ہی اٹھارویں صدی کے قانون میں ردو بدل نہیں کرنا چاہتا تو عدالت اس میں کیا کر سکتی ہے۔جب سے پاکستان بنا ہے کسی بھی سیاسی جماعت نے اس کو سنجیدہ نہیں لیا۔ اگر کوئی قانون بنایا بھی گیا تو رولنگ پارٹی نے اپوزیشں کو دبانے کے لیے بنایا ہے۔جس ملک میں وقت کے ساتھ قانون سازی نا ہو تو اس ملک میں لوگوں کو انصاف نہیں مل سکتا۔اگرچہ وزارتِ قانون بھی ہی اور شرعیہ کونسل بھی ہی مگر یہ سب سیاسی لوگ ہیں قانون بنانا غیر سیاسی لوگوں کا کام ہے۔ چائلڈ ریپ،ایسڈ گردی،ونی،کے قانون ابھی بھی زیر بحث ہیں اگر قانون مو جود بھی ہیں تو کمزور قانون ہیں جدید دور کے تقاضے پورے نہیں کرتے۔ان سب خامیوں کی وجہ سے عدالتی نظام عدل دینے میں سست روی کا شکار ہے۔


دوسری جو سب سے اہم وجہ ہے وہ ہے گورننس۔گورننس اصل میں حکومتی ادارے ہیں ۔اگر آپ عدالتوں میں مقدمات کی تفصیل دیکھیں تو آپ کو سب سے زیادہ کیسز عام آدمی بنام سرکار نظر آئیں گے۔اسکا مطلب یہ ہوا کہ سرکار کی زیادہ مسئلے عدالتیں حل کر رہی ہیں۔آپ کو واپڈا،پولیس،لینڈ ریونیو ،ایف ہی آر،کسٹم،اور دوسری سرکاری اداروں کی کرپشن،نا انصافی،اقربا پروری،رشوت،بلیک میلنگ،کام چوری کے کیس نظر آئیں گے جن کا مدعی ایک عام شہری ہو گا۔جب کے یہ مثلا اداروں کا ہے اور انکو حل کرنا چاہے۔ ہر ادارے کے اندر احتساب کمیٹی ہوتی ہے جس کی یہ ذمےداری ہے کہ وہ لوگوں کے مسائل حل کرے مگر انکی اپنے لوگوں سے ملی بھگت کی وجہ سے عام شہری اُن پر اعتماد نہیں کرتے۔عدالتوں کا رخ کرتے ہیں۔جب اینٹی کرپشن خود کرپشن کا شکار ہو تو بوجھ عدالتوں پر ہی آے گا۔ان کیسز میں عدالتوں کا 90 فیصد وقت ضائع ہو جاتا ہے۔اگر یہ ادارے انصاف سے کام کریں تو عدالتوں کا بوجھ کم ہو جائے۔ان کی نا کا می کی وجہ سے عدالتوں میں کام کا بوجھ بڑھ جاتا ہے اور رفتار کم ہو جاتی ہے۔پھر بھی عدلیہ کو ہی الزام ملتا ہے کے یہ صحیح کام نہیں کر رہی ۔


اسکی علاوہ عدالت خود بھی اپنی موجودہ حالت کی زمہ دار ہے۔عدالت کا اندرونی نظام میں بہت سی خرابیاں ہیں جن کا ذکر کرنا لازم ہے۔ کمپلیکس پروسیجر،اٹھارویں صدی کا نظام،نہ ختم ہونے والی شنوائی،ٹریننگ کی کمی،کرپشن،ڈیٹا کی کمی،ریسرچ ورک کی کمی،زبان کا مسئلہ ،ججز کی کمی،عدالتوں کی کمی،بجٹ کی کمی،ججز کی سیلیکشن اور سپیشلسٹ ججز کا فقدان گواہی کا مسئلہ، ،محدود دائرہ کار کی وجہ سے بھی عدالتیں اپنا کام نہیں کر پاتی۔ عدالتوں کا اسٹاف بھی اس کام میں پیش پیش ہیں۔ ایک فائل کی نقل لینی ہو تو لیگل طریقے سے آپکو کبھی بھی نہیں ملے گی کوئی نے کوئی نقص نکل ائے گا۔ اگر چند پیسے دے دیں تو اسی وقت آپ کا کام ہو جائے گا۔ اپنی مرضی کی تاریخ لینی ہو یہ کیس کو لٹکانا ہو ئے سب ممکن ہو جاتا اگر عدالت کا اسٹاف آپکا ساتھ شامل ہے۔جب عدلیہ خود ہی ان سب غفلتوں پر چپ ہے تو باہر سے کسی نے بھی انکو درست نہیں کرنا۔

اسکے علاوہ پولیس اور لینڈ ریونیو کا بھی ڈائرکٹ لینک عدالتوں سے ہے ان دو ڈیپارٹمنٹ میں کرپشن کی وجہ سے عدالتوں کو بڑی مشکل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔کمزور انوسٹی گیشن،ڈیٹا کی کمی، گواہوں کی حفاظت ایف ائی آر کے مسئلے،رشوت ،اقربا پروری،ڈیجیٹل ایوی ڈینس کا فقدان، اور بہت سے ٹیکنیکل کرپشن کی وجہ سے بھی بوجھ عدالتوں پر آ جاتا ہے۔کام یہ غلط کرتے ہیں بد نام عدالتیں ہو جاتی ہیں۔


اس ساری سسٹم میں وکلاء بھی کسی سے کم نہیں ہیں۔پاکستان بار کونسل اب لا کی ڈگری کو محدود کر دیا ہے مگر اس سے پہلے ہر کوئی لا کی ڈگری کو مذاق سمجھتا تھا۔اس جسٹس سسٹم میں بہت سے وکلاء بھی بس وقت گزارنے جاتے ہیں جو کہ پروفیشن کے خلاف ہے۔فیس کا مثلا،کیسز کو طول دینا،کلائنٹس کو بلیک میل کرنا،مس گائیڈ کرنا،ججز کو کام نہ کرنے دینا،گواہ کو کنفیوز کرنا،سیاسی جماعتوں کے ساتھ مل جانا ،مطالعہ کی کمی اور کرپشن جیسے کاموں کی وجہ سے بھی عدالتیں بدنامی ہو جاتی ہیں۔سوئفٹ نے گلیور ٹریول میں کہا تھا کہ وکیل سفید کو کالا اور کالا کو سفید کرنے کا ہنر جانتے ہیں۔ ایسا ہنر سب عدالتی نظام کو برباد کر دیتا ہے۔اسکے علاوہ وکلاء کی ٹرینگ کا کوئی نظام نہیں ہے ،وکلاء عدالتوں میں ہی سیکھتے ھیں،جب کہ ڈگری کے دوران کم سے کم 2 سال کی ہاؤس جاب ہونی چاہے پھر ڈگری ملنے چاہے۔وکیل اس نظام کی ریڑھ کی ہڈی ہیں جب وہ خود اپنے فائدے کے لیے کام کریں گے تو نظام بہتر نہیں ہو گا۔


اس سب کے بعد جو عدالتوں کو بدنام کرتی ہیں وہ سیول سوسائیٹی خود ہے۔آپ دیکھیں عدالتوں میں بہت چھوٹے چھوٹے کیس آتے ہیں۔جیسے گٹر یا نالی کا مسئلہ،پانی کا مسئلہ، جھوٹی گواہی دینا،لڑائی جھگڑا ،ٹریفک چالان کا مسئلہ،کنزیومر کورٹس کے مسئلے ،جھوٹی ایف آئی آر،، بیان بدل لینا،بلیک میل کرنا،اسٹے آرڈر لّے انا، آپسی رنجش جیسے معاملات کو عدالتوں میں لے جاتے ہیں۔ان سب کیسز نے بھی اور عدالتوں کا نام بدنامی کیا ہوا ہے۔اس عوام کے چھوٹے مسئلے جو کہ لوکل لیویل پر حل ہو جاتے ہیں جب عدالتوں میں آتے ہیں تو پھر ان کے اہم کیس بھی نہ سنئے جاتے۔ عدالت اتنی اُلجھ جاتی ہے کہ اہم کیس کو صحیح وقت نہیں دے پاتی۔پھر یہی الزام عدالتوں کو دیتی ہیں کہ سسٹم خراب ہے۔


اگرچہ یہ سب رکواٹوں کے باوجود عدالتیں دن رات کام کر رہی ہیں۔ وکلاء اور ججز اس نظام کو بہتر سے بہترین کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔ جس کی مثال یہ ہے کہ جسٹس آصف سعید کھوسہ نے 1994 سے لائن میں لگے 73000 ٹرائل کو مکمل کر دیا ہے۔جب وہ ریٹائر ہوئے تب 23 اضلاع میں کوئی بھی نارکوٹکس کا کیس نہیں تھا۔،20 اضلاع میں کوئی بھی فیمیلی کیس نہ تھا،29 اضلاع میں رینٹل اپیل کا کوئی کیس نہ تھا،پھر انہوں نے ایس پی کمپلین سیل بنایا جس سے 30 فیصد بوجھ لوئر کورٹس اور 15 فیصد ہائی کورٹس پی کم ہو گیا تھا،انہوں نے 235 دِنوں میں 15555 کیس حل کئی ہیں۔۔مگر اس کے علاوہ بھی ابھی بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے ۔

سب سے پہلے آزادنہ قانون سازی کی جائے جو جدید دور کے تقاضے پورے کرتی ہو ۔اس کے لیے ایک غیر سیاسی ادارہ ہونا چاہے جو کے آئین پاکستان کے نیچے کام کرے۔سیاست دان اس قانون کو پاس یہ فیل کسی عقلی دلیل پر کر سکتے ہیں چاہے وہ قانون انکے خلاف ہی کیوں نہ ہو ۔سیاسی مقدمے میں غلط ثابت ہونے والی جماعت کی رکنیت ختم کر دی جائے گی تا کہ قوم اور عدالت کا وقت ضایع نہ ہو۔

لوئر کورٹس پر سب سے زیادہ توجہ کی ضرورت ہے۔ کیوں کہ یہاں سے ہے ہائر کورٹس کے ججز بنتے ہیں۔ بار کونسل کو چاہے لا کی ڈگری میں ریفارم لے کے آئے۔اگر کسی نے کرمنل کرنی ہے یہ سویل میں جانا ہے اسکو لا کے بعد 2 سال ہاؤس جا ب اور سپیشلسٹ ہونا ہو گا۔ ججز کی سیلیکشن میں ریفارم کی ضرورت ہے ۔اس کے علاوہ انکی ٹرینگ بھی دو سال کی ہو کسی سینئر جج کے نیچے،ججز کی ترقی عمر پر نہیں مقدمے حل کرنے کی بنیاد پر ہونی چاہے،ججز اور عدلیہ کی تعداد بڑھانے کی ضرورت ہے،۔ہر کیس کے لیے وقت مقرر کر دیا جائے۔وقت نہ اتنا زیادہ ہو کے، (justice delayed, justice denied) اور نہ ہی اتنا جلدی کہ (justice hurried, justice burried) ہو جاے۔

اداروں کی کرپشن کی وجہ سے جب عدالت کا وقت ضایع ہو تو اس ادارے کے ہیڈ کو سزا ملنی چاہے تا کہ دوبارہ کوئی ایسا لاپروائی نے ہو،۔پولیس کے مطلقہ ریفرنس لایا جائے کے ہر ڈسٹرک میں انوسٹی گیشن ٹیم ڈی پی او اور سیشن جج کے انڈر ہو گی اُسکا پولیس سے کوئی لینا دینا نہ ہو گا۔ڈائریکٹ رپورٹ دیں گئیں۔وّكلا کو بھی چاہے ، ایتھکس کو فالو کریں،کیس کو لمبا کرنے کی بجے جلدی ختم کریں،کلائنٹس کا بھی خیال کریں،ڈسپلن،رولز،ریگیولر تی کو قائم رکھیں۔کلائنٹس کو پرویپر گائیڈ کریں،اگر لگے کے یہ کیس عدالت کا وقت ضایع کرے گا اسی وقت اُسکی چھوڑ دیں۔


پبلک کو بھی خیال کرنا ہے عدالتوں انکو انصاف دینے کے لئے ہیں۔اگر ایسے جھوٹی مقدمے،جھوٹی گواہی دیں گے تو کل کو انکو انصاف جلدی نے ملے گا۔یہ صرف عدلیہ کا قصور نہیں ہے بلکہ ہم سب اس کے زمہ دار ہیں۔ہم سب کو مل کہ اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہو گا تا کہ ہم اس سونے کو زنگ لگنے سے بچا لیں۔اگر ایسا نا کیا تو پھر وہی ہو گا جو ایک پنجابی شاعر نے کہا تھا۔۔۔


جتھے ہون جہالتاں۔۔

بگلے لان عدالتاں۔۔

کاں پئے کرن وکالتاں۔۔

سبھ نوں ملن زلالتاں۔۔


دل دا شیشہ صاف نہیں رھنںدا۔۔

اوتھے فر انصاف نہیں رھندا۔۔


نعیم الیاس۔


(اگر آپکو میری تحریر پسند آئی ہے تو آگے شیئر کر دیں نہیں تو میری رہنمائی کر دیں۔)

Show more
0
156
https://avalanches.com/pk/layyah__394542_09_06_2020

محبت کیا ہو تم۔

ایک عطا ہو تم يا خطا ہو تم،انا ہو یا فنا ہوتم، "یہاں"ہو یا "وہاں" ہو، وفا ہو یا جفا ہو تم۔محبت کی سمجھ بھی نہ سمجھ ہے، نہ سمجھ بھی ایک سمجھ ہے۔محبت زمین بھی ہے ،یہ آسمان بھی ہے،یہ "میں" بھی ہے ،یہ "تو "بھی ہے،یہ "ہم" بھی ہے یہ "وُہ" ہے،یہ باطن بھی ہی یہ ظاہر بھی ہے۔کبھی یہ جلوہ ہے ،کبھی یہ پردہ ہے،کبھی یہ وصل ہے کبھی یہ تنہائی ہی،کبھی یہ ویران ہے، کبھی یہ آباد ہے۔محبت آزاد بھی ہے، محبت غلام بھی ہے،محبت شعلہ بھی ہے، محبت شبنم بھی ہے،کبھی شمع ہے تو کبھی پروانہ بن کے نظر آتی ہے،کبھی عالم بن جاتی ہے کبھی جاھل بن جاتی ہے۔محبت منزل بھی ہی اور یہ راستہ بھی ہی،کانٹوں کا نام بھی محبت ہے اور پھول بھی محبت کے گلستان ہیں۔


محبت۔۔! کیا ہو تم۔۔؟ کبھی دل ہو کبھی دھڑکن ،کبھی سکون ہو ،کبھی پاگل پن،کبھی فتور ہو، کبھی طور ہے،کبھی سمندر ہو کبھی صحرا ہو،کبھی قاعدہ کبھی فائدہ،کہیں محدود تو کہیں بےحساب ہو، کبھی فنا ہو،کبھی بقا ہو۔ کہیں الم ہو ہو ،کہیں قلم ہو،،کہیں سکون ہو اور کہیں جنگ ہو تم۔


محبت کی تعریف کرنا ایسے ہے جیسے کسی بچے کی مسکراہٹ کو بیان کرنا ہے،جیسے نابینا کو رنگ بیان کرنا ہے۔۔۔ محبت کا ہر رنگ نرالا ہے،اس پہ لاکھوں مرنے والے ہیں،شاعر،قصیدہ نگار،ادب،علم،عقل،دین، مذہب،انسانیت،رہبانیت کے استاد اس کو بیان نہ کر سکے۔یہ ایک ایسی قوس قزح ہے جس کے سب رنگ آپس میں ملے ہوئے ہیں،اگر کوئی اس کو الگ کر کر دیکھئے گا تو محبت اپنا وجود کھو دے گی۔۔ کیٹس،شیلی،ملٹن،ورڈزورتھ ہو،يا رومی ،سعدی،شیرازی ہو،اقبال، غالب،میر ہو یا بلھے شاہ ہو، سب کی سب محبت کے سمندر میں ڈوب گے ہیں۔ محبت لکھتے لکھتے یہ محبت کی نظر ہو گئے مگر تعریف نہ لکھ سکے۔قرآن میں بھی کہا گیا ہے اگر سب سمندروں کی سیاہی بنا دیا جائے تو بھی اپنے رب کی عظمت لکھتے لکھتے ختم ہو جائے گی مگر عظمت ختم نہ ہو گی۔۔یہ عظمت محبت ہی تو ہے ،محبت کی گہرائی میں جو گیا وہ محبوب کا ہو گیا،اور جس کو محبوب مل جائے اسکی کو سب مل جاتا ہے۔


محبت تو ایک سفر ہے اپنے اندر سے اندر تک جانے کا،ایک جنون ہے کچھ پا جانے کا،ایک کربلاء ہے سر کٹوا جانے کا،محبت کھیل ہے خوف کا،محبت نام ہے جنون کا، محبت سوال ہے عروج کا اور نام ہے زوال کا،یہ بن بادل برسات ہے،یہ خاموشیوں کی ملاقات ہے،یہ دن ہے، یہ رات ہے،یہ ایک ساز ہے ،یہ ایک راگ کے،یہ ایک محاذ ہے۔ دراصل یہ تو اک آس ہے۔


محبت کی زبان خاموش ہے،یہ تو آنکھوں سے بات کرتی ہے،یہ ناچ ہے،یہ عام ہے،یہ خاص ہے۔ یہ وہ آگ ہے جس میں انسان جلتا ہے،مگر وہ پھر بھی محبوب کی طرف چلتا ہے،کہیں یہ ٹوٹتے دل کی صدا ہے،کہیں یہ صبر کی انتہا ہے،کہیں یہ راحت یہ تو کہیں یہ آهٹ ہے۔


محبت کی دنیا الگ ہے ،محبت کا دین الگ ہے،محبت کی نماز الگ ہے،

محبت میں انسانیت کی بقا ہے،محبت میں سب راز زندگی پنہا ہیں۔اپنے من میں کھو کہ پا جا سراغ زندگی دراصل محبت ہی کی بات ہے۔یہ ڈھونڈنے سے نے ملنی یہ تیرے اندر کی دنیا ہے جو بس تو اور صرف تو ڈھونڈ سکتا ہے۔۔


محبت کے قواعد الگ ہیں، دنیا داری بھی محبت ہے،علم سے لگاؤ بھی محبت ہے،حقوق اللہ بھی محبت ہے حقوق العباد بھی محبت،ماں بھی محبت ہے ،باپ بھی محبت ہے، بہن بھی محبت ہے بیوی بھی محبت ہے،دوست بھی محبت ہے،اپنا بھی محبت ہے، غیر بھی محبت ہے،ہمسائیہ بھی محبت ہے،انسانیت بھی محبت ہے،محبت کی اصل انسان ہی ہے۔۔


اے انسان،تو اچھا نہ بن،تو محبت کرنے والا بن ،تو محبت سیکھ،تو محبت بانٹ،تو محبت کو ضرب دے اور محبت کو ہے تقسیم کر۔۔

ادب پہلا قرینہ ہے محبت کی قرینوں میں،

یہ ادب ہے تو محبت سکھاتا ہے،جو سر کو جھکا دیتا ہے۔ ادب کا ہے ہی کمال ہے نہ زمین پر سجدہ اور آسمان پر گونج ہے،یہ ادب ہی ہے جو اویس قرنی بناتا،یہ ادب ہے تلوار کو ذوالفقار بناتا،یہ ادب عطا ہی عطا ہے،یہ ادب بقا ہی بقا ہے،یہ ادب ہی ہے جو انسان کو انسان بانٹتا ہے۔۔


پنجابی میں کہا جاتا ہے۔۔ہے ادب مقصود نہ حاصل تے درگائی ٹو ہی۔" بے ادب انسان کو کچھ نہی ملتا اس کی مثال ایسی چرواہے کی ہے جو خنزیر چراتا ہے جس کا نہ دودھ پی سکتا ہے،نہ گوشت کھا سکتا ہے،اور نہ ہی بیچ سکتا ہے۔۔۔"


سوچ میں کیو ں پر گیا ہے ؟۔سوچ کیا رہا ہے،؟دیکھ کیا رہا ہو؟،سمجھ کیا رہا ہے؟ بس تو میری مان بس تو محبت کر چھوڑ دے سب فلسفے ۔تو محبت کر اپنے آپ سے،اپنی ذات سے،پھر دیکھ سب کچھ تیرے سامنے کھل جاتا۔یہ زمین یہ آسمان،یہ تیرے گمشدہ نشان،تیرے بہت اونچے ہیں مقام۔تو خودی میں جل جا،پھر دیکھ تیرے پروازبغیر پروں کے تُجھے کہاں لیے جاتی ہے۔

اس دنیا بنانے کا مقصد صرف محبت ہی تھا،یہاں محبتیں بانٹیں جائیں تو بعد میں بھی محبتین ملیں گی۔کون کہتا ہے یہ دنیا چھوڑ دو،یہ دنیا چھوڑنے کے لیے ہوتی تو رب کائنات اس دنیا کو بناتا ہے کیوں ۔۔۔اس نے محبت کے لیے دنیا بنائی۔ کیا کہتا ہے رب قرآن میں کہ ۔"میں نے آپ صلی االلہ علیہ وسلم کو تمام جہانوں کے لیے رحمت بنا کے بیجا۔"۔رحمت در اصل محبت ہی کا نام ہے۔اس نے کہا ہے اس دنیا میں رہ کہ محبت کر مگر محبت کے قاعدے بنا دئیے ہیں۔۔اُن قاعدہ کو مت توڑ۔دنیا نہ چھوڑ ،دنیا میں رہ،دنیا میں غور و فکر بہت محبت ہے ۔رب کی انسان سے محبت تھی نہ کہ اس نے انسان کو دنیا میں اپنا خلیفہ بنا دیا ، فرشتوں سے انسان کو سجدہ کروا دیا۔ یہ سجدے کیوں کروائے تا کہ آج کا انسان یہ کہہ دے کہ میں نے دنیا ترک کرنی ہے؟ اگر دنیا ترک کرنی تھی تو اللہ نے 1 لاکھ چالیس ہزار انبیاء کیو ں بھیجے ؟ سب محبت کے لیے بھیجے تک انسان محبت کرے۔


محبت شروع ہوتی اپنے آپ سے ۔اپنے آپ سے محبت کیا ہے ؟اپنے آپکو سیدھی راستے پہ لانا، دوسری انسانوں سے محبت کرنا، انکے حق ادا کر نا، اُن کا خیال رکھنا۔محبت تو محنت کا نام ہے،محبت تو عبادت کا نام ہے،محبت تو دنیا داری کا نام ہے،محبت تو حُسنِ سلوک کا نام،محبت تو عزت کا نام ہے،محبت تو عشق کا نام ہے محبت تو بہتر سے بہترین ہونے کا نام ،محبت سائنیس کا نام ہے،محبت آرٹس بھی ہی،محبت حصول علم بھی ہے،محبت دنیا میں ترقی کا نام بھی ہے،محبت ملک کی حفاظت بھی ہے،محبت چرند پرند،جنگل و صحرا کی حفاظت کا نام بھی ہے۔

تو بس دینا میں رہا کے محبت کر یہ دنیا ہے جنت بن ہے گی۔۔۔


اگر محبت نہیں کر سکتا تو،تو محبت کی کی" م" ہو جا۔۔۔۔اس" م" میں سب راز ہیں۔"م "میں مٹ جانا، یا مر جا نا ہی نہیں ہے، "م" میں مروت بھی ہے،"م" میں محنت بھی ہے،"م "میں موت بھی ہے،"م" میں ملائک بھی ہے، "م" میں موت کی مثال سے مراد ہے،ضد،آنا ،خودی،تکبر،گناہ،برائی کی موت ہے، اسی موت میں ہی اصل حیات ہے۔


آج کے انسان کے مسئلے ہیں محبت سے دوری کی۔محبت نہ تو ہم گھر سےملتی ہے، اور نہ ہی سکول میں محبت نہیں دی جاتی۔ آپ کو محبت نہیں ملے گی۔ مدرسہ اور مسجد میں محبت کا درس نے دیا جاتا۔۔ایک فرقہ دوسرے کو نفرت کرتا ہے۔آپ اپنے اِرد گرد دیکھئے آپکو محبت نہیں نظر آے گی باقی سب نظر ائے گا۔ہمارا گھر محبت نہیں دیتا،ہمارا اسکول نہیں دیتا،ہماری مسجد نہیں دیتی،ہمارا میڈیا نہیں دیتا،تو پھر خرابی تو ہو گی نہ ہر جگہ۔

آج کے انسان کو بس یہی کرنا ہے،اسکو محبت سیکھنی ہے،اسکو محبت کرنی ہے،اسکو محبت باٹنی ہے،اسکو محبت کا باغ لگانا ہے جس میں پیار،محبت،عشق،حُسنِ سلوک،نیکی،انسانیت، اچھائی،کے پھول اگانے ہیں۔آپ محبت کرنا شروع کر دیں،اپنے آپ سے،اپنی اولاد سے،اپنے گھر سے،اپنے محلے سے،اپنے شہر سے،اپنے ملک سے،اپنی دنیا سے اور سب سے بڑھ اپنے جیسے دوسرے انسانوں سے چاہے کوئی امیر ہے يا غریب،کالا ہے یہ گورا،شیعہ ہے یہ سنی،سندھی ہے یہ پنجابی،ہندو ہے یہ مسلم، اچھا ہے یا برا آپکو اسی دنیا میں ہی سکون مل جائے گا۔۔



نعیم الیاس۔

(اگر آپ کو میری تحریر پسند آئی ہے تو براہ مہربانی اسکو آگے شیئر کر دیں، اگر نہیں آئی تو میری رہنمائی کر دیں شکریہ)



Show more
0
173
https://avalanches.com/pk/layyah__378282_07_06_2020

تحقیق کی جنگ


آپ کا تعلق پاکستان پیپلز پارٹی سے ہے يا آپ پاکستان مسلم لیگ ن کے ساتھ کھڑے ہیں،آپ جماعت اسلامی کے چاہنے والے ہیں يا کسی بھی لبرل جماعت کے حق میں ہیں۔ آپ سعودیہ کے ساتھ دیتے ہیں یا آپ ترکی کو خوش آمدید کہتے ہیں۔آپ روس کو سپر پاور مانتے ہیں يا آپ امریکا کو دنیا کا طاقت ور ملک مانتے ہیں۔یہ سب آپ کا سیاسی ، سماجی ،نظریاتی ،اور انسانی حق ہےکہ آپ اپنی مرضی سے کسی بھی نظریے ،سوچ ،يا جماعت کو پسند کر سکتے ہیں یا کسی کو بھی رد کر سکتے ہیں۔ دنیا کا کوئی بھی قانون آپ کو اس حق سے نہیں روک سکتا اگر کوئی قانون آپ کو روکتا ہے تو اس بات سے روکتا ہے کی آپ بغیر کسی دلیل کے،بغیر کسی ثبوت کے يا بغیر کسی علم کے کسی بھی شخص،جماعت یا نظریے کو رد نیہں کر سکتے۔


در اصل یہی تو انسان کی وجہ تخلیق ہے جو اسکو اشرف المخلوقات بناتی ہے ۔انسان دلیل، عقل ،علم ،دانش کے ساتھ کسی کے خلاف بھی بات کر سکتا ہے اور اس کے حق میں بھی بات کر سکتا ہے۔ دنیا اس وقت نظریے کی جنگ لڑ رہی ہے۔ایسی جنگ جس میں آپکو کسی بھی قسم کا اسلحہ یا یورنیم کی ضرورت نہیں پڑتی ۔یہ لفظوں کی جنگ ہے۔اس جنگ میں بس آپکے نظریات کو استعمال کیا جاتا ہے اور ایک بھی گولی ضائع کیے بغیر دشمن ملک کو تباہ کر دیا جاتا ہے۔اس جنگ کا نام ففتھ جنریشن وار ہے۔۔یہ میڈیا کی جنگ ہے۔ اس جنگ میں آپکی سوچ،الفاظ،جذبات،خیال، احساس،اور تصورات کا استمعال آپ کے اپنے ہی خلاف کیا جاتا ہے۔ جیسا کہ عراق،یمن،لیبیا،اور دوسرے وسطی ایشا کی ممالک میں آرمی کے حملے تو بعد میں ہوئے تھے مگر سب سے پہلے وہاں کے لوگوں اور حکومت کے درمیان تضاد پیدا کیا گیا تھا،جس کو بعد میں عرب سپرنگ کا نام دیا گیا۔کونین کی کڑوی گولی کو شہد میں ملا کے دے دیا گیا۔اس کا نتیجہ آپ کے سامنے ہے کے وہاں اب زندگی ایک عذاب بن گی ہے۔

ففتھ جنریشن وار کا ایک ہی منشور ہے کے لوگوں کی سوچ بدل دو اور اُن کو تحقیق سے دور کر دو۔ وہ خود ھی آپس میں لڑ کے کمزور ہو جائیں تو اُن پہ حملہ کر دو۔آج کل پاکستان میں بھی اس اثرات نظر آنا شروع ہو گئے ہیں۔ اگر آپ سوشل میڈیا دیکھ لیں تو آپکو کافی حد تک ایسی نیوز نظر آئیں گی جن میں انتشار،خوف، ڈر،سیاسی جماعتوں ،فوج،اور اداروں کے خلاف بہت کچھ نظر آے گا۔افسوس اس بات کا ہم بغیر تحقق،علم،اور ثبوت کے اس سب پہ یقین کر لیتے ہیں جس کا سب سے بڑا نقصان ہماری نوجوان نسل کو ہو رہا ہے۔اُن کو درست اور غلط کا فرق نظر آنا کم ہوتا جا رہا ہے ۔آج کل یہ حال پاکستان کی دو بڑی سیاسی جماعتوں کی سپورٹرز کی بیچ بہت زیادہ پایا جاتا ہے۔دونوں جماعتوں کے لوگ بغیر تحیقات کے ایک دوسرے کو نیچا دکھانے کے لیے بہت کچھ ایسا پوسٹ کر دیتے ہیں جس کا حقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں ہوتا مگر وہ ملک کی سالمیت اور امن کے لیے خطرناک ہوتا ہے۔اس علاوہ فرقہ واریت کو بھی بھی زیادہ سے زیادہ ہوا دی جا رہی ہے۔ کرونا، پولیو ،پر بھی غلط معلومات کو بڑھا کر پیش کیا جاتا ہے۔


ہم جذبات میں اتنا آ چکے ہیں کے ہم اپنی جماعت،اپنے فرقے یا اپنے نظریے کے خلاف کچھ بھی سننا پسند نہیں کرتے۔ہمارے اس اختلاف نے ہم کو پیپر ورک،مطالعہ،ریسرچ سے بھی میلوں دور کر دیا ہے۔ہم اپنی مرضی کے نیوز چینلز دیکھتے ہیں،ہم اپنی سوچ کے ساتھ مطابقت رکھنے والے تجزیہ نگاروں کو سننا پسند کرتے ہیں اور اپنی مرضی کا لیٹریچر پڑھتے ہیں۔ یہ در اصل ایک اندھے کنواں ہے جس میں جہالت ،نفرت ،انتشار کے علاوہ کچھ بھی نہیں اور اس کا انجام بربادی ہے ۔


سب کو سوچنا ہو گا کے پاکستان میں جتنی بھی سیاسی جماعتیں گزری ہیں اُنکا پاکستان کی ترقی میں ایک اہم کردار رہا ہے،پاکستان کے اداروں نے بہت خوب کام کیا ہوا ہے، جتنی بھی مخالف جماعتیں گزری ہیں انہوں نے گورنمنٹ پہ ہمیشہ تنقید کرتی آئی ہیں۔پاکستان میں میڈیا،پولیس،عدلیہ،فوج، سیاست دان،سیول سوسائٹی،اور باقی سب ادراروں بھی اپنا کام خوب اچھے انداز میں کرتے آئے ہیں ،کر رہے ہیں اور کرتے رہیں گیں۔ اس میں کوئی شک نیہی کہ ماضی میں غلطیاں بھی ہوتی رہی ہیں،ہوتی بھی ہیں اور آگے بھی ہوں گی۔


مگر ہمیں کیا کرنا ہے ۔ہمیں خود کو بدلنا ہے۔ہمیں تنقید کی بجائے تحقیق کرنی ہے،ہمیں دوسری جماعتوں کو برا کہنے کے بجائے اپنی جماعت کے منشور،انکے کام ،انکے غلطیوں پر تحقیق کرنی ہیں،ہمہیں خود سے سوال کرنا ہے میں جس کے بھی ساتھ ہوں تو کیوں ساتھ ہوں؟میں کسی کے مخالف ہوں تو کیوں مخالف ہوں؟،ہمیں اپنے غلط کام کو یہ کہ ڈیفنس نہیں کرنا ہو گا کے ہم نے یہ غلط کیا تو کیا؟ وہ بھی تو یہ غلط کام کر رہے ہیں۔ بلکہ ہم کو اپنے آپ،اپنی جماعت،اپنے فرقے پر زور دینا ہو گا اپنی کمی کو دور کرو ،دوسروں کےبہتر کام کو بھی کھلے دل سے ماننا ہو گا۔ہم کو پڑھنا ہو گا،سمجھنا ہو گا،اپنی مرضی کے تجزیہ نگار،چینل اور نیوز پیپر سے بھی اختلاف کرنا ہو گا،ہم کو زمہ داری کے ساتھ اپنے اپنے دائرے کو درست کرنا ہو گا۔ہم کو حکومت پر بھی یقین کرنا ہو گا،ہم کو دوسری سیاسی جماعتوں کو بھی عزت دینا ہو گی،اور ہم کو اداروں کے وقار کو بھی سمجھنا جو گا ۔


یہ ملک آپکا ہے اور یہ لوگ آپ کے ہیں۔آپکو اس جنگ میں فرنٹ لائن کا کردار ادا کرنا ہے۔آپکو بس ایک زمہ داری کا ثبوت دینا ہے وہ زمہ داری ہے تحقیق کی۔آپکو اندھی تقلید کو چھوڑنا ہے۔آپ نے غلط اور درست کو ایسی عدالت میں پرکھنا ہے جہاں فیصلے عدل،تحقیق،علم،دلیل، اور عقل سے ہوتے ہیں نہ کہ ایسی عدالت جہاں جذبات،کم علمی اور اندھی تقلید پر کیے جاتے ہیں۔کیو ں کہ کبھی کبھی عقل کا غلط فیصلہ بھی جذبات کے درست فیصلے سے بہتر ہوتا ہے۔آپکو بدلنا ہے خود کے لیے،اس ملک کے لیے،اپنے مسقبل کے لیے۔یہ تبدیلی بس تحقیق کی ہے۔آپ اپنے اندر تحقیق کی عادت ڈال لیں آپ یہ جنگ جیت جائیں گے کوئی بھی آپکو گمراہ نہیں کر سکے گا۔۔


رانا نعیم الیاس

Show more
0
200
Other News Pakistan
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_for_booking_03214822266_4573208_30_09_2022

Contact For Booking: 0321-4822266

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

Islamabad Girls are the most beautiful and well-kept women who are the best companions to realize your fantasies.

These are seductive, sexy, elegant, passionate and incredibly wet women all the time, you just have to see it to believe it.

Islamabad Escorts are always willing to please you and enjoy every second they spend with their customers.

They are no less than any model or independent escort, Islamabad girls are the best Escorts in Islamabad.

If you have never tried one, I would say that you lack a definitive experience that is only your legacy and that no other escort can reach that level.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

Show more
0
11
https://avalanches.com/pk/mardan_waqar_khan_is_a_pakistani_model_actor_singer_waqar_khan_born_in_304453453_24_09_2022

Waqar Khan is a Pakistani Model, Actor, Singer. Waqar Khan born in 30, June 1992 in Mardan Pakistan,

Waqar khan family In Mardan Pakistan. his father Saif Ullah khan is a businessman.

Waqar khan Belong to Pukhtoon family. Waqar completed his graduation in Awkum.

Waqar first drama on Avt Khyber drama name Mor baibay ao naway EP # 09.

Waqar Khan first song title Janan o baran on available on YouTube and all music stores.

Show more
1
7

Hussan Ahmad Ks Aka Hassan Ahmad Khan ( حسان احمد خان) Pakistani Popular Young Pakistani singer


This field has attracted young & dynamic youth towards it & one such name is of a young boy called Hussan Ahmad Ks. He hails from the Pakistani state of Punjab and has gained an edge in this field allowing everyone to take a lead in this and Hussan Ahmad Ks in this industry remains one who is a known name.

Hussan Ahmad Ks (Urdu: حسان احمد خان) was born in Narowal (April 2, 2002) and raised in the main State of Pakistan which is Punjab. In his school life, he began writing rap songs and poetry as a creative. Hussan Ahmad Ks also became a good Pakistani Poem Reciter in his school life. He wins many prizes at that time.

He read many books at early age and he explores his writing skill as well. He is verified on all famous music streaming platforms like Spotify, Jiosaavn, YouTube, Musixmatch and many others.

As a Pakistani Musical Artist & Digital Creator, Hussan Ahmad Ks make many music contents on various kind of social platform. He is also a Poem Reciter, Lyricist, Blogger, writer, and Entrepreneur in Pakistan.

It is generally not easy for an Entrepreneur to be so well accomplished at a young age. But Hussan Ahmad Ks has surpassed every level and made his name in the marketing industry, he is one of those self-made entrepreneurs who can provide you with any and every digital marketing service.

After all, he has worked with more than 700 clients, if that isn’t impressive! A good client base allows the digital marketers to not only build his image but also grow the numbers of clients for the future. Because that way he can help out more brands and companies alongside counting his profits.

One of his quote is “Of course, with hardship comes ease”

  • Facebook: www.facebook.com/hussanahmadks
  • Instagram: www.instagram.com/hussanahmadks
  • Twitter: https://www.twitter.com/hussan_ks

Address: Narowal, Pakistan.

Show more
0
11
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_now_03214822266_we_have_the_most_amazing_and_talented_es4231114_13_09_2022

Contact Now : 0321-4822266

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.


-


#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Show more
0
28
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_03214822266_best_escorts_agency_in_islamabad_and_rawalpindi3053778_13_09_2022

Contact 0321-4822266


Best Escorts agency in Islamabad and Rawalpindi. We providing you a great opportunity for making your life some moments special and relax able. We have top class Escorts profiles and every type of girls that you want to us for any purposes for full night.

If you want to spend your much of time with a beautiful and young girl and if you want to take a lot of fun by beautiful girls,

So, then contact us for booking.


#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts

Show more
0
18

اچو ته ثقافت ۽ شائستگي سان جڙي وڃون٠٠!!


(شمائلا رند)


اڄ جڏھن اسان جي سنڌي سماج ۾ جتي پنھنجن کي نوازڻ جو سلسلو عروج آھي ھر طرف ٻه اکيائي واري رجھان گھاڻي ۾ پيڙھجندڙ ماڻھن کي اڳيان وڌڻ بجاء پٺتي ڌڪي ڇڏيو آھي، ذھني اَذيتن ۾ ڏاڍ ۽ جَبر ۾ ڦاٿل غريب اٻوجھ ماڻھن غلامي قبولي ڇڏي آھي،سياسي ۽ سماجي حَوالي سان اسان وٽ ھر ھڪ عام ماڻھو به ٻئي ماڻھو لاء رَنج ۽ تعصب رکي ٿو! ھَٺ،غرور،تعصب پرستي ۾ ايترا غرق ٿي چڪا آھيون جو ھاڻي رشتن تان به ويساه ڀروسو کَڄندو پيو وڃي!پر جيڪڏھن سنڌ جي ماضي جي تاريخ جا سمورا صفحا اٿلائي ڏسون ٿا تنھن وقت ۾ سنڌ ۾ ماڻھو پڙھيل گھٽ ھوندا ھئا پر ھڪ ٻئي لاء احساس رکندڙ ۽ محبتون خوب ونڊيندا ھئا پر ھنيئر جتي سنڌي ماضي جي ڀيث ۾ علمي دنيا ۾ جيتري به ترقي ڪئي اوتري ئي ترقيء اسان جي دلين مان احساس کَسي نفرتن جي ھڪ نواڻ جنم ورتو آھي ھاڻي ته رشتا به ڪا شيء ناھن رھيا! بس پئسي جي پاور ۽ حَوس جنھنڪري ھلندڙ وقت ۾ ماڻھو پئسي کي گڏ ڪرڻ زندگي جي ڪامياب سمجھي ٿو، پئسو پئسو ھا!بس پئسو! مڃون ٿا زندگي جو ڪارونھوار ھلائڻ لاء پسئو ضرور ته ھجي ٿو پر رشتن کان وڌيڪ پئسو ڪيئن ٿو ٿي سگھي۔؟ اسانجي مذھب ۾ رشتن جو احترام ۽ رشتن کي سلامتي سان نڀائڻ قائم رکڻ جي سٺي تاڪيد ٿيل آھي پر پوء اھي سڀ چيزون جن اسانکي ماڻھوء جي مثل باقي ڄڻ جانور بَڻائي ڇڏيو آھي ھتي آئون ھڪ ڳالھ ضرور ڪنديس ته اسان سنڌ واسين ثقافت کي به روڳو ٽوپي اجرڪ سان سلھاڙي محدود ڪري ڇڏيو آھي مڃون ٿا اھي به اسانجي ثقافت جو حصو آھن پر،مختصر جائزو وٺجي ته صرف محدود ثقافتي ڇو؟ صرف ٽوپي اجرڪ ثقافت ڇو؟ پر ان سان گڏ ثقافت جو اھم حصو ٻيو اسان کان ڇو کَسجي ويو آھي،جنھن سان ماڻھن جي سٺائي جي خبر پئجي سگھي،جنھن ماڻھن جي زنده رھڻ جي درست روين جي خبر پئجي سگھي،جنھن ماڻھن اٿڻ،ويھڻ ۽ لھجن جي خبر پئجي سگھي! جيئن ”ٽالسٽاء لکي ٿو؟ ثقافتن سان جڙيل ماڻھو ڪنھن جو حق غضب نٿو ڪري سگھي،ثقافت سان جڙيل سماج جو اھم حصو ھجي ٿو جيڪو ڪنھن لاء غلط نٿو سوچي سگھي، ھڪ اھڙي ثقافت جيڪا ماڻھن مان محسوس ڪئي وڃي جنھن ۾ سٺائي کانسواء ڪجھ به نظر اچي جنھن ۾ جڙڻ کانپوء ڪير ڪنھن لاء تعصب ۽ بغض نه رکي ۽ نه ئي ڪنھن جو نقصان ڪري سگھي جنھن صفت ۾ صرف سٺائي نظر اچي پر بَدنيتي نه!

Show more
0
5
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_032557777003953514_30_08_2022
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_032557777003953514_30_08_2022
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_032557777003953514_30_08_2022
https://avalanches.com/pk/islamabad_contact_032557777003953514_30_08_2022

Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar


Contact: 0325-5777700

-

We have the most amazing and Talented Escort girls in Islamabad and Rawalpindi.

The most sought after and requested escort profiles in Islamabad are Islamabad escorts.

These are the ladies who are the most beautiful, fascinating, seductive and experienced Escorts of Islamabad.

High society girls feel lonely and want to have fun with you.

They are the perfect companion for anyone who admires beauty with sexual attractiveness.

The Escorts of the Islamabad is the wild companions who try to find hot and adventurous men who satisfy their deep sexual desires.

Islamabad Escorts offers a range of services that cater to a wide range of tastes;

CIM – Come in your mouth, COB Let’s go body, Couples, manual work, Deep Throat, Fingering, Foot fetish, French kiss,

GFE – Experience with girlfriends, Blowjob without a condom, oral sex, Role-playing games, blowjobs and more .

You just have to name it and the hot Girls are ready for what you want.

With their warm curves and their unlimited desire to have sex, the Girls of Islamabad are the Escorts with the highest erotic charge in Islamabad.

-

#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore

#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi

#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi

#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad

#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls

#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar

Show more
0
38
https://avalanches.com/pk/karachi_contact_03213333882_welcome_in_ou3836822_24_08_2022

Contact: 0321-3333882

---------------------------------

Welcome in Our Escorts Agency. If you are in search of a sexy escort in Karachi, then you have come to the right place!

The city is a hub for education and industrial activity and is full of hot young girls.

You can meet these girls by hiring a sexy escorting service! These escorts have a great attitude and can make you feel weak as a lamb.

They have all the charm and sophistication of a movie star and can play tricks with words and phrases.

You can get the services of a professional escorts service in Karachi. These nanny services will take care of all your intimate needs.

You can choose from a variety of beautiful girls. These nannies will ensure that you are happy with your sex partner and will enjoy their company!

When hiring an escort, make sure to discuss your expectations with your nanny service! You will be able to find an ideal call young lady in Karachi.

-


#CallgirlsinLahore #EscortsinLahore #LahoreEscorts #LahoreCallGirls #Lahore


#CallgirlsinKarachi #EscortsinKarachi #KarachiEscorts #karachiCallgirls #Karachi


#CallgirlsinRawalpindi #EscortsinRawalpindi #RawalpindiEscorts #RawalpindiCallgirls #Rawalpindi


#CallgirlsinIslamabad #EscorstinIslamabad #IslamabadCallgirls #IslamabadEscorts #Islamabad


#Escorts #CallGirls #SexyCallGirls #HotCallGirls #TeenCallGirls #VIPEscorst #VIPCallGirls


#SexyEscorts #SexyCallGirls #Models #Actress #Tiktokar

Show more
0
72